یہ لوگ دنیا کو محض مادی مفاد کی عینک سے دیکھتے ہیں

0
28

“یہ لوگ دنیا کو محض مادی مفاد کی عینک سے دیکھتے ہیں، لیکن بالغ نظر افراد جانتے ہیں کہ انسان کو محض مادی محرکات ہی عمل پر نہیں اکساتے۔ اس کے اندر نور فروزاں ہوتا ہے اور اسے بعض ” دیگر عناصر” سے بھی تحریک ملتی ہے “

دیگر عناصر سے میری مراد وہ سرچشمہ ہے جس نے یہودیوں کو یورپ و برطانیہ کی سرسبز وادیاں چھوڑ کر اسرائیل کے صحراؤوں میں دوبارہ آباد ہونے پر مجبور کیا۔

وہ سرچشمہ جس نے پاکستان کو جنم دیا۔

مذہب بیزار اس طبقے کو اندازہ ہی نہیں کہ اس دنیا میں درحقیقت انکی اور ان کے احمقانہ نظریات کی کوئی وقعت و حیثیت نہیں۔ یہ لوگ مذہبی نظریات کے درمیان ہونے والے فیصلہ کن ٹکراؤ میں استعمال ہونے والے آلات سے زیادہ کچھ نہیں۔

جن کو ضرورت پورا ہونے کے بعد پھینک دیا جائیگا!

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here