– حکومت مخالف لوگ برمی مسلمانوں پر ظلم و ستم کی بات چھیڑ کر پاکستان کی حکومت پر لعن طعن کر رہے ہیں.

0
958
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

خاور محمود صاحب کا کمنٹ ۔۔۔۔۔۔ !

یہ لوگ جو کسی دوسرے ملک پر چڑھ دوڑنے کی بلند پروازی دکھا رہے ہیں، ان میں یقینا کچھ یہ اظہار غم و غصے سے مغلوب ہو کر رہے ہونگے کیونکہ برما کی انسانیت سوز قتل و غارت ، قصے کہانیوں کے مناظر کو بھی ڈھیر پیچھے چھوڑ گئی ہے مگر اسیموضوع کا فائدہ اٹھانے والے کچھ خبیث بھی ہیں ، جیسے

– حکومت مخالف لوگ برمی مسلمانوں پر ظلم و ستم کی بات چھیڑ کر پاکستان کی حکومت پر لعن طعن کر رہے ہیں.

– فوج مخالف لوگ پاک فوج کو بے غیرتی کے طعنے دے رہے ہیں.

– سعودیہ اور سنی اتحادی فوج مخالف لوگ اس اتحاد پر کیچڑ اچھال رہے ہیں.

– سی پیک مخالف (آستیں کے سانپ) لوگ، برما کے بدھسٹ لوگوں کا ظلم و بربریت دکھا کر پاکستانیوں کو چینیوں سے بد ظن کر دینے کے لئے پوری تندہی سے جٹے ہوۓ ہیں تاکہ سی پیک اور گوادر پورٹ ناکام ہو جائے (اور بھارت + ایران کی چاہ بہار پورٹ کامیاب ہو جائے).

الغرض ہر کوئی اپنی قوم کو کوسنے میں آستیںیں چڑھائے کھڑا ہے. کہ وہاں برما میں بدھسٹ لوگ مسلمانوں کو مار رہے ہیں اور ہم آپس میں لڑ مریں.

برما ایک آزاد، خود مختار ریاست ہے اس پر فوج کشی نہ تو کسی مسلم ملک کا حق ہے اورنہ ہی مسلمان ملکوں میں کوئی امریکہ جیسا بدمعاش ہے جس میں یہ کر گزرنے کی استطاعت ہو. خاص طور پر پاکستان اس وقت ٣ اطراف سے دشمنوں کے نرغے میں ہے ، دشمن بھی وہ جن کی پشت پر امریکہ اور اسرائیل جیسی خبیث قوتیں پاکستان کو صفحہء ارض سے مٹا دینے عزم لئے گھات میں ہیں. ایسے میں جوش سے زیادہ ہوش کی ضرورت ہے.

جہاد کا وقت ہے تو اگر زور بازو سے ممکن نہیں ہے تو کرنے کا کام یہ ہے کہ

1. تمام اسلامی حکومتیں اس معاملے کو اقوام متحدہ میں اٹھائیں.

2. برما کی حکومت سے اس کے سفارت خانوں کے توسط سے احتجاج کریں. خاطر خواہ جواب نہ ملنے کی صورت میں ان سے ہر طرح کے تعلقات منقطع کر دینے کا انتباہ دیا جائے.

3. برمی مسلمانوں کے لئے مالی مدد اور اقوام متحدہ کے توسط سے “امن فوج” تعینات کروائی جائے.
اللہ سب کو اپنی حفظ و امان میں رکھے.


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here