امریکہ ا گر اپنی پالیسی بدل دے یا یہاں سے نکل جائے تو یہ اس کی سلامتی کے حق میں زیادہ بہتر ہوگا

0
983

پاکستان ایک زرخیز ملک ہے جو انسانی اور قدرتی وسائل سے بھرپور ہے اور ساتھ ہی ساتھ ہی اس کو خدا نے بہترین دماغوں سے بھی نوازا ہواہے۔اور ایسے ہی کچھ دماغ جب آپس میں ملے اور ملک کی بہتری کے لیے کوشاں ہوئے تو پاک فوج کا ادارہ آئی ایس آئی وجود میں آیا اور بلاشبہ پاکستان کی پہچان بنا۔یہ بات سبھی جانتے ہیں کہ آئی ایس آئی نے پاکستان کے لیے عظیم ترین اور بہترین خدمات سرانجام دیں اور ہر محاذ پر ملک کا دفاع کیا اکیلے اس نے سی آئی اے،را اور موساد کی تمام چالوں کا مقابلہ کیا اور فتح مند ہوا۔اور یہی وجہ ہے کہ اب یہ ادارہ تمام پاکستان مخالف قوتوں کی آنکھ کا کانٹا بنا ہوا ہے۔بات دراصل یہ ہے کہ یہ قوتیں جو اسلام اور پاکستان کی مخالف ہیں آئی ایس آئی سے خوفزدہ ہیں اور امریکہ سے لیکر اسرائیل تک اور بھارت سے لیکربھارت تک سب اسکی صلاحیتوں سے آشنا ہیں۔

امریکہ بھارت کے ساتھ جوہری معاہدہ کرتا ہے تو اسے پاکستان کے لیے خطرہ قرار نہیں دیتا بھارت اور اسرائیل کے ایٹم بم بھی دنیا کے امن لیے بہت ضروری ہیں اور ان کے انٹیلیجنس ادارے اور جاسوسی نظام بھی لیکن پاکستان کو اپنے دفاع کے حق سے بھی محروم کیا جائے ۔بات تو دراصل یہ ہے کہ یہ تمام ممالک اور ادارے پاکستان کے خلاف سرگرم ہیں ۔ امریکہ، اسرائیل، بھارت اور ان کے اداروں سی آئی،را، موساد اور یہاں تک کہ خاد کے تمام کارناموں کی خبر یہی آئی ایس ٓئی رکھتی ہے ۔

زندہ اور زمینی حقیقت یہ ہے کہ اپنے سے کئی گنا زیادہ بجٹ رکھنے والے سی آئی اے کے آگے یہی آئی ایس آئی ڈھال کے طرح تنا ہوا ہے اس کا ہر وار روک کر کھڑا ہے دراصل امریکہ اس وقت اپنی تاریخ کے بدترین شکست کہا چکا ہے

چونکہ ان دشمن طاقتوںکو اس بات کا علم ہے کہ ایٹمی طاقت اور آئی ایس آئی ان کا راستہ روکے ہوئے ہیں اور یہی وجہ ہے آئے دن ان کے خلاف بیانات داغ دیئے جاتے ہیں۔ ایٹم بم کو خطرہ لاحق کر دیا جاتاہے

لیکن مقام شکر اور فخر یہ ہے کہ اس سب کچھ کے باوجود نہ تو قوم کا حوصلہ پست ہوا نہ فوج کا اور نہ ہی آئی ایس آئی نے اپنے کام سے غفلت برتی ۔پاکستان سے وفاداری اِن لوگوں اور اداروں کا فرض بھی ہے اس ملک سے محبت کا تقاضہ بھی یہی اور اس ہوا میں سانس لینے کا قرض بھی جو یہ سب ادا کر رہے ہیں۔

قوم کا قصور یہ ہے کہ یہ مسلمان ہے ایٹمی قوت ہے اپنی زمین سے وفادار ہے اور اپنے دشمنوں کے آگے ڈٹ سکتی ہے یہی سب کچھ فوج اور آئی ایس آئی کرتی ہے جس کے لیے اسے قصوروار قرار دیا جاتا ہے۔لیکن اگر یہی سب کچھ امریکہ اور اسکے حواری کردیں تو اسے حب الوطنی قرار دیا جاتا ہے۔

امریکہ ا گر اپنی پالیسی بدل دے یا یہاں سے نکل جائے تو یہ اس کی سلامتی کے حق میں زیادہ بہتر ہوگا
امریکہ اور تمام دنیا پاکستان کی صلاحیتوں سے آشنا ہے کہ سپر پاور روس کا اس نے جس دلیری سے مقابلہ کیا اور اس کا جغرافیہ بدلا وہ اس کی ہمت کا ثبوت بھی ہے اور تاریخ بھی۔اور اسے اگر اس تاریخ کو دہرانا پڑے تو شاید دنیا میں کسی بھی سپر پاور کا وجود ہی نہ رہے۔

Credit #PAKSOLDIER_HAFEEZ

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here