اس عوامی ہجوم کو بے قابو کرنا اب کچھ مشکل نہیں رہا۔

0
89

شعلہ فشاں حرص و آس، ذہنی خلفشار، مایوسیاں اور سلگتے عوامی جذبات۔

شائد یہ فصل پک چکی۔

اس عوامی ہجوم کو بے قابو کرنا اب کچھ مشکل نہیں رہا۔

یہ مغضوب لاغضب عوامی ہجوم ان لوگوں کا خون بہا دے گا جن کو یہ آغوش مادر سے ہی رشک و حسد کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں جو بری طرح سے انکی گردنوں پر سوار ہیں اور انکا خون چوس رہے ہیں۔

عوام صرف قتل و غارت گری پر ہی اکتفا نہیں کریں گے بلکہ یہ ان املاک کو بھی لوٹ لیں گے جو انکے خیال میں انکے خون پسینے کی کمائی سے بنائی گئیں ہیں۔

البتہ اس قسم کا انقلاب بے انصاف ہوتا ہے۔ اس کو دنیا کی کوئی طاقت کنٹرول نہیں کرسکتی۔

اور غاصب اس کو قریب کر رہے ہیں۔

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here